جواں سال شاعر

Saturday, August 18, 2018

🔆 *غزل* 🔆

🔆   *غزل*   🔆

*آم  جتنے  جناب  بھیجے  ہیں*
*ان میں کچھ کچھ خراب بھیجے ہیں*

*میری آنکھوں کو آپ نے اکثر*
*چلچلاتے  سراب بھیجے ہیں*

*اپنے بچوں کے واسطے ماں نے*
*اپنی پلکوں کےخواب بھیجے ہیں*

*نقل کرنے کو امتحانوں میں*
*خود مدرس جواب بھیجے ہیں*

*یہ خراشیدہ ہاتھ کہتے ہیں*
*تم نے شاید گلاب بھیجے ہیں*

*راستے یوں تو  ہر مسافر کو*
*حوصلے  بے حساب بھیجے ہیں* 

*ہم نے  راہی گناہ سر لے کر*
*ان کے حق میں ثواب بھیجے ہیں*

۔۔۔ڈاکٹر یاسین راہی

No comments:

Post a Comment

Pages